اگر ریاست مدینہ بن گئی تو 19 کروڑ لوگوں کے ہاتھ کٹے ہوئے ہوں گے،انور مقصود

16

لاہور (این این آئی) معروف مزاح نگار انور مقصود نے کہا ہے کہ وزیراعظم بننے کے بعد سارے بیایمانوں کو معاف کردوں گا۔ایک سیشن کے دوارن مزاح نگار اور ادیب انور مقصود نے ماہرہ خان سے سوال پوچھا کہ اگر آپ پاکستان کی وزیراعظم بن گئیں تو سب سے پہلے کیا کام کریں گی؟

ماہرہ خان نے مسکراتے ہوئے کہا کہ فلم ‘قائد اعظم زندہ باد’ میں اداکار قوی خان کا ڈائیلاگ تھا جس میں انہوں کہا تھا کہ ‘یا اللہ کوئی ایسا معجزہ ہوجائے کہ ساری حرام اور حلال کی کمائی میں فرق ہو’۔جس پر انور مقصود نے کہا کہ صرف ایماندار ہونا کافی نہیں ہے، جس طرح ایک گندی مچھلی پورے تالاب کو گندا کرسکتی ہے اسی طرح ایک اکیلا ایماندار شخص پورے ملک کو بے ایمان کرسکتا ہے، اکیلا ایماندار کچھ نہیں کرسکتا، پورا سسٹم تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔اس کے فوراً بعد ماہرہ خان نے انور مقصود سے یہی سوال کیا کہ اگر آپ وزیراعظم بنے تو سب سے پہلے کیا کریں گے؟جس پر انہوں نے طنزیہ انداز میں جواب دیا کہ وزیراعظم بننے کے بعد سارے بے ایمانوں کو معاف کردوں گا، وہ خود ہی بے ایمانی چھوڑ دیں گے۔انور مقصود نے مزید کہا کہ میں سب کو آزاد کردوں گا 30 کروڑ کی آبادی ہے، اگر ریاست مدینہ بن گئی تو 19 کروڑ لوگوں کے ہاتھ کٹے ہوئے ہوں گے۔

موضوعات:انور مقصود

نفرت کے بیوپاری

میں نے واپسی پر طارق فاطمی صاحب سے پوچھا ’’کیا ہم واقعی ایران اور سعودی عرب کو اکٹھا بٹھا لیں گے‘‘ طارق فاطمی سنجیدہ انسان اور گہرے سفارت کار ہیں‘ یہ زیادہ ہنستے مسکراتے نہیں ہیں لیکن اس دن یہ بھی ہنس پڑے اور آہستہ آواز میں بولے‘ مجھ سے یہ سوال کل میاں نواز شریف نے بھی پوچھا تھا‘ ….مزید پڑھئے‎

میں نے واپسی پر طارق فاطمی صاحب سے پوچھا ’’کیا ہم واقعی ایران اور سعودی عرب کو اکٹھا بٹھا لیں گے‘‘ طارق فاطمی سنجیدہ انسان اور گہرے سفارت کار ہیں‘ یہ زیادہ ہنستے مسکراتے نہیں ہیں لیکن اس دن یہ بھی ہنس پڑے اور آہستہ آواز میں بولے‘ مجھ سے یہ سوال کل میاں نواز شریف نے بھی پوچھا تھا‘ ….مزید پڑھئے‎

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.