اندھیرے کو اجالے میں تبدیل کرنے والا پودا تخلیق

7

مکوآنہ (این این آئی)سائنس دانوں نے تاریکی میں روشن ہونے والا پودے تخلیق کرکے بڑی کامیابی حاصل کرلی۔سائنس ایڈوانسز نامی سائنسی جریدے میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق محققین پودے کی تخلیق میں ایک نئی تکنیک استعمال کی گئی، جس سے بالآخر کامیابی مل گئی تحقیقاتی ٹیم کا اس بارے میں کہنا ہے کہ پودوں کی تخلیق کے لیے فنجائی سے پانچ مختلف قسم کے جینز حاصل کرکے مطلوبہ پودے میں داخل کیے جاتے تھے، یوں ایک ہی جین کی مدد سے تاریکی میں ایل ای ڈی لائٹس کی طرح روشن ہونے والا پودا تیار کرلیا۔

اہم بات یہ ہے کہ نئی تکنیک سے تیار کیا گیا پٹونیا پلانٹ (گل اطلس)، تاریکی ہونے پر ماضی میں تیار کیے گئے اس نوع کے پودوں سے سو گنا زیادہ روشن دکھائی دیتا ہے، اسی وجہ سے تجارتی بنیادوں پر اس پودے کی مانگ میں برق رفتاری سے اضافہ ہوا ہے۔یہ تحقیق لائٹ بایو نامی فرم کے تحت کی گئی تھی، اور یہی فرم ‘فائر فلائی پٹونیا’ کی فروخت بھی کررہی ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.