پی ٹی آئی سے مذاکرات، مولانا فضل الرحمان ڈٹ گئے، اہم اعلان

16

اسلام آباد (این این آئی) جمعیت علماء اسلام و پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ حکومت کے اتحادی ہونے کی حیثیت سے ہم نے پی ٹی آئی سے مذاکرات نہ کرنے کی تجویز دی،یہ ہمارا حق ہے جس پر ہم قائم ہیں،تاریخ میں پورے ملک میں انتخابات اکھٹے ہوتے چلے آ رہے ہیں، عدالت عظمی کیوں نوے دن کے اندر پھنس گئی؟

پنجاب میں جو پارٹی الیکشن جیتے گی وہ ہی وفاق میں حکومت بنائے گی،جلد ملک گیر سطح پر عوامی رابطہ مہم شروع کرینگے۔ جمعیت علمائے اسلام کی مجلس عاملہ کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ حکومت کے سامنے اپنا موقف پیش کیا ہے کہ ہم پی ٹی آئی کے ساتھ مذاکرات کے حق میں نہیں جس پر وزیر اعظم نے سینیٹ کی سطح پر کمیٹی بنانے اور وہیں بات کرنے کی تجویز دی مگر ہم کسی بھی سطح پر مذاکرات کا حصہ نہیں بنیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پوری تاریخ میں ملک میں انتخابات اکھٹے ہوتے چلے آ رہے ہیں، عدالت عظمی کیوں نوے دن کے اندر پھنس گئی؟ پنجاب میں جو پارٹی الیکشن جیتے گی وہ ہی وفاق میں حکومت بنائے گی۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ میں آج ہونے والی سماعت پر عدالت کا رویہ تبدیل نظر آیا، کہا مذاکرات سے کوئی تعلق نہیں اور ساتھ ہتھوڑا بھی دکھاتے ہیں ہمارا فیصلہ وہی ہے جو دیا ہے، سینیٹ میں بھی مذاکرات کا حصہ نہیں بنیں گے اپنے موقف پر قائم ہیں۔انہوں نے کہا کہ مردم شماری پر تحفظات ہیں، حکومت سے کہا ہے ڈیجیٹل کا طریقہ درست نہیں، لسٹیں بننی ہیں اس پر انتخابات ہونے ہیں اس کو دوبارہ چیک کریں، مشین کے ذریعے الیکشن بھی کرائے گئے تھے نتائج سب کے سامنے ہیں۔انہوں نے اعلان کیا کہ جے یو آئی جلد ملک گیر سطح پر عوامی رابطہ مہم شروع کرے گی۔

موضوعات:مولانا فضل الرحمان

امداد کے منتظر مزید دو ادارے

’’مجھے گفٹ نہیںچاہیے‘ کپڑے بھی نہ دیں‘ مجھے تو بس’’سجادہ‘‘دے دیں‘ یہ مطالبہ حجاب میں ملبوس چھوٹی سی بچی کر رہی تھی‘ اس نے ہمیں گرم شال بھی واپس کر دی‘ مہمت نے بتایا یہ بچی کہہ رہی ہے مجھے جائے نماز چاہیے‘میں نے کئی دنوںسے نماز نہیںپڑھی‘ میںنے فوراً اپنے بیگ سے بچی کو سفری جائے نماز نکال کر ….مزید پڑھئے‎

’’مجھے گفٹ نہیںچاہیے‘ کپڑے بھی نہ دیں‘ مجھے تو بس’’سجادہ‘‘دے دیں‘ یہ مطالبہ حجاب میں ملبوس چھوٹی سی بچی کر رہی تھی‘ اس نے ہمیں گرم شال بھی واپس کر دی‘ مہمت نے بتایا یہ بچی کہہ رہی ہے مجھے جائے نماز چاہیے‘میں نے کئی دنوںسے نماز نہیںپڑھی‘ میںنے فوراً اپنے بیگ سے بچی کو سفری جائے نماز نکال کر ….مزید پڑھئے‎

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.