ترکیہ بھی جوہری طاقت رکھنے والے ممالک میں شامل ہو گیا

11

انقرہ(این این آئی) ترکیہ پہلے جوہری پاور پلانٹ کے افتتاح کے بعد جوہری طاقت رکھنے والے ممالک کی فہرست میں شامل ہو گیا۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ترکیہ کے صدر رجب طیب اردگان نے ایکویو پاور پلانٹ کو جوہری ایندھن کی ترسیل کی تقریب سے ورچوئل خطاب کیا۔

ترکیہ کے صدر نے کہا کہ 60 سال کی تاخیر کے بعد جوہری طاقت رکھنے والے ممالک کی فہرست میں شامل ہو گئے ہیں جبکہ اکویو پاور پلانٹ کو ہوا اور سمندر کے ذریعے جوہری ایندھن کی ترسیل کے ساتھ اس پلانٹ نے اب ایک جوہری پلانٹ کا درجہ حاصل کر لیا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ ترکیہ کی قدرتی گیس کی درآمدات کو سالانہ 1.5 ارب ڈالر تک کم کرنے میں کردار ادا کرے گا اور قومی آمدنی میں اضافے کا بھی باعث بنے گا۔واضح رہے کہ اکویو جوہری پلانٹ ترکیہ کے جنوبی صوبے مرسین میں تعمیر کیا گیا ہے جس کی پیداواری صلاحیت 4 ہزار 800 میگاواٹ اور 4 ری ایکٹرز تک متوقع ہے۔ترکیہ کا یہ جوہری پلانٹ رواں سال کے آخر میں بجلی کی پیداوار شروع کرنے کے قابل ہو جائے گا۔ترکیہ کا یہ پہلا جوہری پاور پلانٹ روس کے تعاون سے تعمیر کیا گیا ہے۔ ترکی اور روس کے درمیان ایک بین الحکومتی معاہدے پر مئی 2010 میں دستخط کیے گئے تھے اور پلانٹ کے سنگ بنیاد کی تقریب 3 اپریل 2018 کو منعقد ہوئی تھی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.