حکومت کو اپنی رٹ قائم کرنی ہوگی،اب دنیا آپ کو پیسے دینے کیلئے تیار نہیں ،مفتاح اسماعیل

18

لاہور (این این آئی)سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ پاکستان میں گورنس کا نظام ناقص ،فرسودہ ہو چکا ،نظام کی تبدیلی کے بغیر آگے نہیں بڑھ سکتے،حکومت کو اپنی رٹ قائم کرنی ہوگی،اب دنیا آپ کو پیسے دینے کیلئے تیار نہیںجن مالی مسئلے میں پھنسے ہیں، مشکل سے نکلیں گے۔

لاہور میں ری امیجنگ پاکستان سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ اس وقت جس مالی مسئلے میں پھنسے ہیں، مشکل سے نکلیں گے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں گورنس کا نظام ناقص اور فرسودہ ہو چکا ہے، پاکستانی حکومت کو 6 ہزار ارب روپے سود میں دینا ہے۔مفتاح اسماعیل نے کہاکہ 20سے 25اراب ڈالر قرضہ واپس کرنا ہے، اس سال 800 ہزار روپے کا بجٹ خسارہ ہے، آئی ایم ایف کے ایک اور پروگرام میں جانا ہو گا۔سابق وزیر خزانہ نے کہا کہ ہم ایک سے قرضہ لے کر دوسرے کو دیتے ہیں، حالیہ سال ایک ہزار ارب روپے کا بجٹ خسارہ ہوگا، نظام کی تبدیلی کے بغیر آگے نہیں بڑھ سکتے۔انہوں نے کہا کہ بدترین مالی بحران کی وجہ سے دنیا قرض دینے کو تیار نہیں، جس حالات میں پھنسے ہیں اس سے نکلنے میں دو سے تین سال لگیں گے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے ہائر ایجوکیشن کو تباہ کر دیا ہے، کوشش کر رہے ہیں گردشی قرضہ کم ہو جائے، ہر بدلتی حکومت کے ساتھ گردشی قرضہ بڑھتا جا رہا ہے۔مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پی آئی اے کو ٹھیک کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، پی آئی اے نے 20برسوں میں پیسے نہیں کمائے، اس سال پی آئی اے کو 90ارب روپے کا نقصان ہوا، ہم پی آئی کو ٹھیک کر سکے اور نہ ہی نجکاری کرسکے۔سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت کو اپنی رٹ قائم کرنی ہوگی، حکومت کو مہنگائی کا سدباب کرنے کے لیے فوری طور پر کچھ کرنا ہوگا، پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاری کے لیے ایک ڈالر نہیں آتا۔

موضوعات:ڈاکٹر مفتاح اسماعیل

امداد کے منتظر مزید دو ادارے

’’مجھے گفٹ نہیںچاہیے‘ کپڑے بھی نہ دیں‘ مجھے تو بس’’سجادہ‘‘دے دیں‘ یہ مطالبہ حجاب میں ملبوس چھوٹی سی بچی کر رہی تھی‘ اس نے ہمیں گرم شال بھی واپس کر دی‘ مہمت نے بتایا یہ بچی کہہ رہی ہے مجھے جائے نماز چاہیے‘میں نے کئی دنوںسے نماز نہیںپڑھی‘ میںنے فوراً اپنے بیگ سے بچی کو سفری جائے نماز نکال کر ….مزید پڑھئے‎

’’مجھے گفٹ نہیںچاہیے‘ کپڑے بھی نہ دیں‘ مجھے تو بس’’سجادہ‘‘دے دیں‘ یہ مطالبہ حجاب میں ملبوس چھوٹی سی بچی کر رہی تھی‘ اس نے ہمیں گرم شال بھی واپس کر دی‘ مہمت نے بتایا یہ بچی کہہ رہی ہے مجھے جائے نماز چاہیے‘میں نے کئی دنوںسے نماز نہیںپڑھی‘ میںنے فوراً اپنے بیگ سے بچی کو سفری جائے نماز نکال کر ….مزید پڑھئے‎

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.