چاہتا ہوں ون ڈے میں چوتھے نمبر پر کھیلوں، پانچویں پوزیشن سے خوش نہیں، محمد رضوان

18

کراچی (این این آئی)پاکستان کرکٹ ٹیم کے وکٹ کیپر بیٹر محمد رضوان نے کہا ہے کہ ہر میچ ہمارے لیے نیا اور اہم ہوتا ہے، پچھلے میچ کو بھول کر نئے میچ کیلئے میدان میں اترتے ہیں۔پریس کانفرنس کرتے ہوئے محمد رضوان نے کہا کہ ہمارا فوکس اس سیریز کو جیتنے پر ہے، کراچی کی وکٹ پنڈی سے مختلف ہے؟ ہماری کوشش یہ ہوگی کہ ہم کنڈیشنز کو دیکھ کر پرفارم کریں، کس وکٹ پر کتنا اسکور ہوتا ہے یہ پچ اور کنڈیشنز پر منحصر ہے، ہماری جیت ہار میں جتنا کردار ہمارا ہے اتنا آپ کا بھی ہوگا۔

انہوں نے کہاکہ بابر اعظم کو افتخار کی جگہ لے جائیں تو آپ کو بابر نہیں ملے گا، اگر امام الحق کی جگہ افتخار کو کھلائیں تو افتخار کا کھیل نہیں ہوگا، ہر کسی کی اپنی پوزیشن ہوتی ہے، میں چاہتا ہوں ون ڈے میں چوتھے نمبر پر کھیلوں، پانچویں پوزیشن سے خوش نہیں، ضروری نہیں کہ جو میں چاہوں وہی مجھے ملے، میری خواہش علیحدہ، کپتان اور کوچ کو کیا درکار ہے وہ علیحدہ بات ہے، کپتان اور کوچ کو جو بہتر لگے گا وہ میں کروں گا۔

محمد رضوان نے کہا کہ میرے ذہن میں ذاتی سنگ میل کبھی اہمیت نہیں رکھتے، ٹیم میں آپ 11 فخر زمان نہیں رکھ سکتے، اللہ نے ہر انسان کی علیحدہ خوبی بنائی ہے، میں الگ، فخر الگ، بابر الگ ہیں، ہماری 20 کروڑ کی آبادی میں شاید 10 کروڑ تو کمینٹیٹر ہی ہوں گے، آخری ٹی ٹوئنٹی میں ہم اپنے طے ہدف تک آگئے تھے اس لیے عماد نے سنگل لیا، اگر ہم آخری ٹی ٹوئنٹی جیت جاتے تو آج ایسے سوال نہیں ہوتے۔وکٹ کیپر بیٹر نے کہا کہ میں آخر میں رن نہ کرسکا یہ میری غلطی ہے، مجھے ماضی میں ون ڈے میں اوپننگ کا بھی کہا گیا تھا، میں ہر نمبر پر کھیلنے کیلئے تیار ہوں۔ پاکستان میں آٹھویں نمبر پر بھی کھیلا ہوں، جو منیجمنٹ کو صحیح لگے اور کہا جائیگا میں کروں گا، کسی سے شکوہ نہیں کرتا، میں ہر نمبر پر کھیلنے کیلئے تیار ہوتا ہوں۔

موضوعات:محمد رضوان

صحت

حضرت موسیٰ ؑ تاریخی‘ مذہبی اور ادبی لحاظ سے (نعوذ باللہ) مظلوم ہیں‘ یہ دنیا کی ان چند شخصیات میں شمار ہوتے ہیں جن کے نام پر ہزاروں غیر مصدقہ واقعات گھڑے گئے اور دنیا میں کوئی شخص ان واقعات کی تردید‘ تصدیق اور وضاحت نہیں کر رہا‘ آپ کوئی مذہبی کتاب اٹھا کر دیکھیں‘ آپ کو اس میں حضرت ….مزید پڑھئے‎

حضرت موسیٰ ؑ تاریخی‘ مذہبی اور ادبی لحاظ سے (نعوذ باللہ) مظلوم ہیں‘ یہ دنیا کی ان چند شخصیات میں شمار ہوتے ہیں جن کے نام پر ہزاروں غیر مصدقہ واقعات گھڑے گئے اور دنیا میں کوئی شخص ان واقعات کی تردید‘ تصدیق اور وضاحت نہیں کر رہا‘ آپ کوئی مذہبی کتاب اٹھا کر دیکھیں‘ آپ کو اس میں حضرت ….مزید پڑھئے‎

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published.